بدھ , اپریل 24 2019
Home / اہم خبریں / ‘سندھ کی گیس پر پہلا حق اس کا ہے’ پی ایچ ایم اے

‘سندھ کی گیس پر پہلا حق اس کا ہے’ پی ایچ ایم اے

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان ہوزری مینوفیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ سندھ سے نکالنے والی گیس پر پہلا حق اس کا ہے.

پی ایچ ایم اے کے سینٹرل چیئرمین محمد جاوید بلوانی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ آئین پاکستان کے مطابق گیس پید ا کرنے والے صوبے کو گیس پہلے سپلائی کی جائے. انہوں نے کہا کہ ایکسپورٹ میں اضافے اور قیمتی زرمبادلہ کے حصول کی خاطر ایکسپورٹ انڈسٹریز کو ترجیحی بنیادوں پر بلا تعطل مقامی قدرتی گیس کی سپلائی یقینی بنائی جائے۔

جاوید بلوانی نے کہا کہ کراچی اکیلے ملک کی مجموعی ایکسپورٹ کا 52 فیصد ایکسپورٹ شیئر فراہم کرتا ہے۔ کراچی کی انڈسٹریز کو گیس فراہم نہ کرنے کا مطلب ملک کی 52 فیصد ایکسپورٹ کو متاثر کرنا اور اس سے حاصل ہونے والے زرمبادلہ اور ریوینیو کا نقصان ہے۔

انھوں نے گزشتہ کئی سالوں سے رائج ایس ایس جی سی کی انڈسٹریز کوہفتہ وار گیس کی تعطیل پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہفتہ وار گیس کی تعطیل کی وجہ سے ایکسپورٹ انڈسٹریز ہفتہ میں صرف چھ دن کام کرنے پر مجبورہیں جبکہ خطے کے مسابقتی اور دیگر ممالک میں ایکسپورٹ انڈسٹریز کو گیس 24/7، ہفتہ میں سات دن اور سالانہ 365 دن بلاتعطل فراہم کی جاتی ہے۔

جاوید بلوانی نے کہا کہ دیگر ممالک میں حکومتیں پہلے صنعتوں کو مقامی گیس فراہم کرتی ہیں جبکہ ڈومیسٹک اور کمرشل سیکٹرز میں ایل پی جی سپلائی کی جاتی ہے جبکہ پاکستان میں معاملہ اس کے بر عکس ہے.

جاوید بلوانی نے کہا کہ پاکستان میں گیس 1952میں دریافت ہوئی اور اسکی پیداوار کا آغاز1955میں ہوا۔ 1955سے لیکر1970تک قدرتی گیس حکومتی پالیسی کے مطابق صنعتوں اور بجلی پیدا کرنے کے لئے سپلائی کی جاتی تھی جبکہ 1970کے بعد گیس سپلائی کی پالیسی میں تبدیلی کی گئی اور گیس برائے نام قیمت پر چھوٹے قصبوں اور دیہاتوں میں فراہم کی گئی اور اس کے بعد غیر معقول ترجیحی بنیادوں پر ڈومیسٹک سیکٹر کو دی گئی۔

جاوید بلوانی نے مطالبہ کیا کہ مقامی گیس کی سپلائی ترجیحی بنیادوں پر پانچ زیرو ریٹیڈ ایکسپورٹ انڈسٹریز اور اس کے بعد جنرل انڈسٹریز کودی جانی چاہئے۔ جاوید بلوانی نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہامقامی قدرتی گیس کی سپلائی کے حوالے سے ایکسپورٹ سیکٹر کو گھریلو اور کمرشل صارفین کے بعد رکھنے کی وجہ سے تجارتی خسارہ بڑھ گیا اور جی ڈی پی میں بھی کمی ہوئی۔

جاوید بلوانی نے حکومت کو اپیل کی کہ آئین کے مطابق جو صوبہ گیس پید ا کر رہا ہے اسے گیس پہلے ملنی چاہیے ۔ ایکسپورٹ انڈسٹریز کو گیس ترجیحی بنیادوں پر ملنے سے نہ صرف ایکسپورٹس میں اضافہ ہو گا بلکہ قیمتی زرمبادلہ بھی حاصل ہوگا، تجارتی خسارہ میں کمی آئے گی ، جی ڈی پی بڑھے گا اور نئی ملازمتیں بھی میسر ہوں گی۔

Check Also

وزیر اعظم عمران خان نے گھوٹکی میں کہا ہے کہ وہ آصف زرداری اور شریف برادران کو نہیں چھوڑینگے

آصف زرداری اور شریف برادران کو نہیں چھوڑینگے، عمران خان

گھوٹکی (رپورٹ: شبیر عاربانی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہےکہ آصف زرداری اور شریف برادران …